برطانیہ میں 20 پاکستانی ایسا کام کرتے پکڑے گئے کہ ہر پاکستانی کو شرمندہ کردیا، پوری قوم کے لئے انتہائی افسوسناک خبر آگئی

برطانیہ میں 20 پاکستانی ایسا کام کرتے پکڑے گئے کہ ہر پاکستانی کو شرمندہ ...
برطانیہ میں 20 پاکستانی ایسا کام کرتے پکڑے گئے کہ ہر پاکستانی کو شرمندہ کردیا، پوری قوم کے لئے انتہائی افسوسناک خبر آگئی

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں 20پاکستانی نژاد شہریوں کا ایک گروہ ایسے گھناﺅنے جرائم میں جیل پہنچ گیا ہے کہ سن کر ہر پاکستانی کا سر شرم سے جھک جائے گا۔ میل آن لائن کے مطابق یہ گینگ برطانوی شہر ہڈرزفیلڈ میں نوعمر لڑکیوں کو اپنے جال میں پھانس کر انہیں زبردستی منشیات دیتا اور جنسی زیادتی کا نشانہ بناتا تھا۔ ان کی ہوس کا شکار بننے والی لڑکیوں میں کئی کی عمر 11سال سے بھی کم تھی۔ ان میں ایک امر سنگھ ڈھالیوال نامی بھارتی نژاد سکھ بھی شامل تھا جسے اس گینگ کا سرغنہ بتایا جاتا ہے۔ان کے جرائم ثابت ہونے پر انہیں مجموعی طور پر 220سال قید کی سزا سنائی گئی ہے جبکہ گینگ کا ایک رکن برطانیہ سے فرار ہو کر پاکستان پہنچ چکا ہے۔

رپورٹ کے مطابق امرسنگھ ڈھالیوال کو 22لڑکیوں کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے کے جرم میں عمر قید، عبدالرحمان کو 16سال، محمد عظیم کو 5سال، نعمان محمد کو 15سال، زاہد حسن کو 18سال، منظور حسن کو 5سال، محمد قمر کو 16سال، عرفان احمد کو 8سال، فیصل ندیم کو 12سال، محمد اسلم کو 15سال، راج سنگھ برسران کو 17سال، وقاص محمود کو 15سال، نصرت حسین کو 17سال، منصور اختر کو 8سال، ساجد حسین کو 17سال اور محمد افراز کو 6سال قید کی سزا سنائی گئی۔ کئی ملزمان تاحال گرفتار نہیں ہو سکے ، جن کی سزا ان کی عدالت میں پیشی کے بعد سنائی جائے گی۔ پراسیکیوٹرز نے لیڈز کراﺅن کورٹ کو بتایا کہ یہ گینگ ایسی لڑکیوں کو اپنا شکار بناتا تھا جو آسان ٹارگٹ ہوتی تھیں۔ گینگ کے اراکین لڑکیوں کو ورغلا کر اپنے چنگل میں پھنساتے اور انہیں منشیات کا عادی بنا دیتے تھے اور نہ صرف خود انہیں جنسی زیادتی کا نشانہ بناتے بلکہ ان سے جسم فروشی بھی کرواتے تھے۔

مزید :

برطانیہ -