”میں نے تو بچے کا نام بھی سوچ لیا ہے اور۔۔۔“ بالی ووڈ کی خوبرو اداکارہ عالیہ بھٹ نے ”دھماکہ“ کر دیا، ایسی بات کہہ دی کہ رنبیر کپور کو حیرت کا شدید جھٹکا لگ جائے گا

”میں نے تو بچے کا نام بھی سوچ لیا ہے اور۔۔۔“ بالی ووڈ کی خوبرو اداکارہ عالیہ ...
”میں نے تو بچے کا نام بھی سوچ لیا ہے اور۔۔۔“ بالی ووڈ کی خوبرو اداکارہ عالیہ بھٹ نے ”دھماکہ“ کر دیا، ایسی بات کہہ دی کہ رنبیر کپور کو حیرت کا شدید جھٹکا لگ جائے گا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

نئی دہلی (ڈیلی پاکستان آن لائن) بالی ووڈ کی خوبرو اداکارہ عالیہ بھٹ نے حالیہ انٹرویو میں اعتراف کیا ہے کہ انہوں نے بچوں کے ناموں کے بارے میں سوچنا شروع کر دیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔عدالت نے فہد مصطفی کے خلاف بڑا قدم اٹھا لیا، بہت بڑی مشکل میں پھنس گئے کیونکہ۔۔۔ 

عالیہ بھٹ اس وقت بالی ووڈ کی کامیاب ترین اداکاراﺅں میں سے ایک ہیں جنہوں نے بلاک بسٹر فلم راضی کے ذریعے ایک مرتبہ پھر اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوایا ہے۔ عالیہ بھٹ 25 سال کی ہو گئی ہیں اور آنے والے سالوں میں بڑے ناموں کیساتھ چند بڑی فلموں کی تیاریوں میں مصروف ہیں۔

بھارتی خبر رساں ادارے کو دئیے گئے انٹرویو میں جب ان سے یہ سوال پوچھا گیا کہ وہ اپنے سے بڑی عمر کے لوگوں میں رہنے کے باعث وقت سے پہلے ہی بڑی نہیں ہو گئیں؟ تو انہوں نے کہا ممکنہ طور پر ایسا ہی ہے۔ لیکن میری فیملی نے کبھی بھی میرے ساتھ ایک بچے کی طرح سلوک نہیں کیا۔

ہم سب کے درمیان ایک پختہ تعلق ہے اور ہاں میں ایسے لوگوں کے ساتھ وقت گزارتی ہوں جو عمر میں مجھ سے کافی بڑے ہیں۔ لیکن جیسا کہ میں نے کہا عمر صرف ایک ہندسہ ہے، اصل میں آپ کا تجربہ آپ کو عمر دیتا ہے۔ میری زندگی کبھی بھی 20سالہ عام نوجوانوں جیسی نہیں رہی۔

عام سے میرا مطلب ہے کہ کسی بھی دوسرے 20 سالہ لڑکے کا لڑکی کی طرح، ہو سکتا ہے کہ کوئی اور 20 سالہ نوجوان مجھ سے کہیں زیادہ سخت زندگی گزار رہا ہو۔ تو میں ان کے خیالات کو نہیں سمجھ سکتی اور وہ میرے، ہر کسی کی کہانی مختلف ہوتی ہے۔

عالیہ بھٹ نے مزید کہا کہ مجھے نہیں معلوم کہ ایسا اس لئے ہے کہ میں25 سال کی ہو گئی ہے یا پھر کوئی اور وجہ ہے مگر میں نے بچوں نے نام سوچنا شروع کر دئیے ہیں۔ میں خود بھی ابھی ایک بچی ہوں لیکن کسی وجہ سے بچوں کے ناموں نے میری توجہ حاصل کرنا شروع کر دی ہے۔

جب عالیہ سے اس حوالے سے مزید پوچھا گیا تو انہوں نے کہا کہ بچوں کے نام مختلف ہوتے ہیں، میں نے اس سے پہلے کبھی ان کے بارے میں نہیں سوچا۔ لیکن اچانک، میں نے کوئی اچھا نام سنا اور سوچا کہ ’یہ نام ہونا چاہئے۔‘ مجھے دو تین نام بہت پسند ہیں اور میں نے وہ ذہن نشین کر رکھے ہیں!“

مزید : ڈیلی بائیٹس /تفریح