عاصمہ رانی قتل کیس ، مفرور کیلئے قانون میں کوئی ہمدردی نہیں : چیف جسٹس

عاصمہ رانی قتل کیس ، مفرور کیلئے قانون میں کوئی ہمدردی نہیں : چیف جسٹس

اسلام آباد(آئی این پی) سپریم کوٹ نے عاصمہ رانی قتل کیس میں ملزم مجاہد کے ریڈ وارنٹ جاری کردیئے جبکہ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ مفرور ملزم کے لیے قانون میں کوئی ہمدردی باقی نہیں رہتی، جلد یا تاخیر سے ملزم نے پکڑے ہی جانا ہے۔چیف جسٹس پاکستان جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے کوہاٹ کی عاصمہ رانی قتل کیس کی سماعت کی ۔دوران سماعت چیف جسٹس نے ملزم کے چچا سے کہاکہ آپ پی ٹی آئی کے رکن بھی ہیں ، آپ کے مقدمے پر اثرانداز ہونے کا پتہ چلا تو ایکشن لیں گے۔ملزم کے چچا نے عدالت کو بتایا کہ ملزم مجاہد کے والد سے بیرون ملک رابطہ کیا ہے، جس پر چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیئے کہ مفرور ملزم کیلئے قانون میں کوئی ہمدردی باقی نہیں رہتی۔ڈپٹی ایڈوکیٹ جنرل کے پی نے عدالت کو بتایاکہ ملزم کے ریڈ وارنٹ جاری کر رہے ہیں۔ پولیس حکام نے عدالت کو بتایا کہ امید ہے ملزم کو جلد گرفتار کر لیا جائے گا۔پولیس حکام کے مطابق ملزم مجاہد کے ریڈوارنٹ جاری کر دیئے ہیں۔ عدالت کا کہنا تھا کہ ایک ماہ تک نتائج دیں، جس کے بعد سپریم کورٹ نے کیس کی سماعت ایک ماہ کے لیے ملتوی کردی گئی ۔

مزید : علاقائی