پاکستان میں کرونا وائرس کا کوئی کیس سامنے نہیں آیا، ڈاکٹر ظفر مرزا

    پاکستان میں کرونا وائرس کا کوئی کیس سامنے نہیں آیا، ڈاکٹر ظفر مرزا

  



اسلام آباد (آئی این پی) وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا ہے کہ پاکستان میں ابھی تک کروناوائرس کا کوئی کیس سامنے نہیں آیا، نیوایئرمناکرچین سے پاکستان لوٹنے والے چینی شہروں کی کڑی اسکریننگ ہوگی، ایک ہفتے میں 41پروازیں چین سے لاہور،کراچی اسلام آبادآتی ہیں، کروناوائرس سے نمٹنے کیلئے اہم ایئرپورٹس پر اسکریننگ سسٹم لگایاہے، چین سے آنیوالے مسافربغیراسکریننگ ایئرپورٹس سے باہر نہیں جاسکتیمعاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نینجی ٹی وی پروگراممیں گفتگو کرتے ہوئے کہا کرونا وائرس کا اوریجن چین سے مل رہا ہے، اس وائرس میں مبتلامریضوں نے چین میں سفر کیا ہے، یہ وائرس جانوروں کے ذریعے انسانوں میں منتقل ہوتاہے۔معاون خصوصی نے کہا کہ ایک ہفتے میں 41پروازیں چین سے لاہور،کراچی اسلام آبادآتی ہیں، کروناوائرس سے نمٹنے کیلئے اہم ایئرپورٹس پر اسکریننگ سسٹم لگایاہے، چین سے آنیوالے مسافربغیراسکریننگ ایئرپورٹس سے باہر نہیں جاسکتے۔ان کا کہنا تھا کہ سوست بارڈر پر چین اور پاکستان کا اہم انٹری پوائنٹ ہے، پاکستان میں اس وقت 19انٹری پوائنٹس ہیں، کروناوائرس سے متاثرہ چینی شہر میں آنے جانے کی پابندی لگی ہے۔ چین کا نیا سال شروع ہوا ہے پاکستان میں کام کرنیوالے ابھی چین گئے ہیں لیکن جب چینی واپس آئیں گے تو کروناوائرس پاکستان آنے کا خطرہ ہے،نیوایئرمناکرچین سے پاکستان لوٹنے والے چینی شہروں کی کڑی اسکریننگ ہوگی واضح رہے کہ چین میں 540کروناوائرس کے مریضوں کی تشخیص ہوچکی ہے جبکہ اب تک 17لوگوں کی کرونا وائرس سے موت ہوچکی ہے۔

ڈاکٹر ظفر مرزا

مزید : صفحہ آخر