بوڑھی ماں بیٹی پر تشدد کے باعث بہت پریشان رہتی تھی

بوڑھی ماں بیٹی پر تشدد کے باعث بہت پریشان رہتی تھی

لاہور( خبر نگار) شمیم اختر کے والدشمس الدین کے فوت ہوجانے پر اُس کی والدہ کنیز فاطمہ عمر رسیدہ ہونے پر بیمار اور بیٹی پر آئے روز ہونے والے تشدد اور لڑائی جھگڑے کے باعث پریشانی میں مبتلا تھیں اور بیٹی کی ہلاکت کا سنتے ہی کئی گھٹنوں سے کومے میں مبتلا ہیں کہ مقتولہ کی بہنیں لاش کے گھر آنے پر چمٹ چمٹ کر زار وقطار روتی تھیں۔شمیم اختر کی لاش جب اُس کے والدین کے گھر لائی گئی تو سسرالیوں نے نماز جنازہ میں شامل ہونے کی بجائے گھر کو اندر سے بند کرلیا اور تعزیت کیلئے آنے والے لوگوں کو گھر آنے سے منع کردیا اور خاتون کے والدین سے تاحال افسوس تک نہیں کیا گیا ۔تعزیت کیلئے آنے والے مقتولہ کے رشتے داروں سے نہیں ملیں۔ہلاک ہونے والی شمیم اختر کونماز جنازہ کے بعد مقامی قبرستان میں سپرد خاک کردیا گیا۔

مزید : ایڈیشن 1