فہد ملک قتل کیس کا مرکزی ملزم راجہ ارشد افغانستان سے امریکہ فرار ہونا چاہتا تھا

فہد ملک قتل کیس کا مرکزی ملزم راجہ ارشد افغانستان سے امریکہ فرار ہونا چاہتا ...
فہد ملک قتل کیس کا مرکزی ملزم راجہ ارشد افغانستان سے امریکہ فرار ہونا چاہتا تھا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

کوئٹہ (مانیٹر نگ ڈیسک )فہد ملک قتل کیس کا مرکزی ملزم راجہ ارشدافغانستان سے امریکہ فرار ہونا چاہتا تھا ۔میڈیا رپورٹس کے مطابق راجہ ارشد نے 24اگست کو افغان قونصلیٹ کوئٹہ سے ایک ماہ کا ویز ا حاصل کیا ۔راجہ ارشد کے پاسپورٹ پر امریکہ کا ویزہ بھی موجود تھا اور وہ افغانستان سے امریکہ جانا چاہتا تھا ۔وزارت داخلہ نے راجہ ارشد کا پاسپورٹ منسوخ کر کے اس کا نام ای سی ایل لسٹ میں ڈال دیا تھا ۔

فہد ملک قتل کیس کا مرکزی ملزم افغانستان فرار ہوتے ہوئے پکڑا گیا
آج جب راجہ ارشد پاکستان سے افغانستان فرار ہونے کے لیے چمن بارڈر پہنچا تو اسے معلوم نہیں تھا کہ اس کا پاسپورٹ منسوخ ہے اور ای سی ایل میں بھی نام ہے ۔چمن بارڈر پر جب راجہ ارشد نے اپنا پاسپورٹ ایف آئی اے حکام کو دیا تو انہوں نے پاسپورٹ نمبر انٹر کیا جس پر راجہ ارشدکی گرفتاری کے احکامات تھے ۔ایف آئی اے حکام نے راجہ ارشد کو گرفتار کرکے پالیٹکل انتظامیہ کے حوالے کردیا ۔

مزید :

کوئٹہ -