وفاقی کابینہ کا اجلاس ، ایمنسٹی سکیم میں30ستمبر ، افغان مہاجرین کے قیام میں3ماہ کی توسیع

وفاقی کابینہ کا اجلاس ، ایمنسٹی سکیم میں30ستمبر ، افغان مہاجرین کے قیام ...

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی کابینہ نے ٹیکس ایمنسٹی سکیم میں 30 ستمبر تک توسیع کا فیصلہ جبکہ افغان مہاجرین کے پا کستان میں قیام کی مدت میں تین ماہ کی عبوری توسیع کی منظوری دی ہے ۔ سٹیٹ بینک نے ٹیکس وصولیوں کیلئے مخصوص بینکوں کے اوقات کار بڑھادیئے۔ تفصیلات کے مطابق نگران وزیراعظم ناصرالملک کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس گزشتہ روز ہوا ،جس میں ایمنسٹی سکیم جس سے فائدہ اٹھانے کا آج آخری روز ہے سے متعلق اجلاس کو بریفنگ دی گئی جس کے بعد وفاقی کابینہ نے سکیم کی مدت میں 30 ستمبر تک توسیع کا فیصلہ کیاجس کیلئے صدارتی آرڈیننس جاری کیا جائے گا جبکہ سٹیٹ بینک نے ٹیکس وصولیوں کیلئے مخصوص بینکوں کے اوقات کار بڑھادیئے۔ سٹیٹ بینک نے مخصوص بینک برانچز رات 10 بجے تک کھلی رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔ایف بی آر کے مطابق اب تک 51 ہزار افراد نے ایمنسٹی اسکیم سے استفادہ کیا اور ایف بی آر 65 ارب روپے وصول کرچکا ہے۔ اجلاس میں وفاقی کابینہ نے افغا ن مہاجرین کے پاکستان میں قیام کی مدت میں تین ماہ کی عبوری توسیع کی منظوری دی اور افغان مہاجرین کے قیام کی مدت میں مزید توسیع کا معا ملہ آنیوالی حکومت پر چھوڑنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔وفاقی کابینہ نے فنانشل انسٹیٹیوشن رولز 2018 کی بھی منظوری دیدی جبکہ ایف آئی اے کو ریکوری آف فنانسز کے تحت درکار تحقیقاتی ادارہ مقرر کرنے کی منظوری بھی دی گئی۔اس کے علاوہ وفاقی کابینہ نے کیپیٹل ڈیو یلپمنٹ اتھارٹی (سی ڈی اے) کے بجٹ برائے سال 19۔2018 کی بھی منطوری دی گئی۔وزیرخزانہ نے وفاقی کابینہ کو فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ا یف) کے حالیہ اجلاس پر بریفنگ بھی دی۔دریں اثناء ایمنسٹی اسکیم میں توسیع کیلئے صدر مملکت کو قانونی مسودہ تیار کرکے ایوان صدر ارسال کیا گیا جس پر انہوں نے رات گئے دستخط کردیے جس کے بعد سکیم کی مدت میں کی گئی توسیع موثر ہوگئی ۔

مزید : صفحہ اول