پاناما لیکس ،سب کیخلاف تحقیقات ہونی چاہیں، خورشید شاہ

پاناما لیکس ،سب کیخلاف تحقیقات ہونی چاہیں، خورشید شاہ

سکھر(نامہ نگار )قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف سید خورشید احمد شاہ نے کہا ہے کہ حکومت سے ٹی او آرز پر بات کرنے کے لئے تیار ہیں مگر حکومت رابطہ بھی تو کرے، مذاکرات جمہو ریت کا حسن ہوا کرتے ہیں، پارلیمنٹ وزیر اعظم کا حلقہ ہے، اگر وہ اس سے بھاگنا چاہتے ہیں تو یہ ان کی مرضی ہے، حکومت الزام تراشیوں کی باتیں کر رہی ہے مگر ہم نے خوامخواہ ٹی او آرز نہیں بنائے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے اتوارکو سکھرمیں سول اسپتال کے شعبہ سی ٹی اسکین کے دورے کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ اپوزیشن لیڈر نے کہا کہ میاں صاحب اگر ڈرنے اور گھبرانے کی باتیں نہ کرتے تو اچھا ہوتا، انہیں ڈرنا ہی نہیں چاہئے، کوئی بھی سیاست دان ڈرتا یا گھبراتا نہیں۔ انہوں نے کہا کہ اگر وہ قوم کو فیس کرنا چاہتے ہیں تو اس سے بڑھ کر اچھی بات کیا ہو گی۔ سید خورشیدشاہ نے کہاکہ پاناما لیکس میں جس کا بھی نام آئے، اس کے خلاف تحقیقات ہونی چاہیں۔انہوں نے کہا کہ قرض معاف کرانے والے بھی اتنے ہی مجرم ہیں مگر مجرموں کی بھی کٹیگریز ہوا کرتی ہیں، ہمیں قرض معاف کرانے والوں کو بھی نہیں چھوڑنا چاہیے۔ سید خورشیدشاہ نے کہاکہ میں نے پہلے روز ہی کہا تھا کہ بات چیت کے لئے تیار ہیں۔

مزید : کراچی صفحہ اول