ٹیلی نار اور بیکن ہاﺅس نے مل کر گینز ورلڈ ریکارڈ بنا ڈالا

ٹیلی نار اور بیکن ہاﺅس نے مل کر گینز ورلڈ ریکارڈ بنا ڈالا
ٹیلی نار اور بیکن ہاﺅس نے مل کر گینز ورلڈ ریکارڈ بنا ڈالا

  

ٹیلی نار پاکستان اور بیکن ہاﺅس سکول سسٹم نے جمعرات 29ستمبر2016ءکو ہاتھوں کی زنجیر بنانے کا نیا عالمی ریکارڈ بناکر قوم کا سرفخر سے بلند کردیا۔ انسانی ہاتھوں کی سب سے لمبی زنجیر ان سرگرمیوں کا حصہ تھی جو 29 ستمبر کو ٹیلی نار پاکستان کے کسٹمر فرسٹ ڈے کی مسلسل پانچویں سالانہ تقریب کے موقع پر منعقد کی گئیں۔ انٹرنیٹ کے ذمہ دارانہ استعمال پر زور دینے کے لئے ٹیلی نار نے اپنے سالانہ دن کو محفوظ انٹرنیٹ کے لئے آواز اٹھانے والے صارفین کے نام کیا۔ عالمی ریکارڈ بنانے کے علاوہ سات خطوں میں ٹیلی نار ملازمین ہزاروں بچوں اور والدین کو انٹرنیٹ کے محفوظ استعمال سے آگاہ کرنے کے لئے سکولوں اور عوامی مقامات پر گئے۔

شرکاءمیں ٹیلی نار پاکستان کے ملازمین اور بیکن ہاﺅس سکول سسٹم کے طلباءشامل تھے، جنہوں نے ٹیلی نار پاکستان کے انٹرنیٹ کے محفوظ استعمال کے اقدام، جسے کمپنی ”انٹرنیٹ سب کے لئے“ کے عزم کی صورت میں آگے بڑھارہی ہے، کے ساتھ اظہار یکجہتی کے لئے ہاتھوں کی زنجیر بنائی۔ بے مثال ریکارڈ قائم کرنے کے لئے باقاعدہ کوشش 29 ستمبر کو جناح سٹیڈیم سپورٹس کمپلیکس اسلام آباد میں کی گئی، جہاں 2950 شرکاءنے ہاتھوں کی زنجیر بنائی اور اسے ایک منٹ تک قائم رکھا۔

ٹیلی نار پاکستان کے ڈائریکٹر کسٹمر ویلیو مینجمنٹ اینڈ اینالیٹکس ملک فیصل قیوم کا کہنا تھا ”ہم سمجھتے ہیں کہ انٹرنیٹ کے محفوظ استعمال کے بارے میں تعلیم اور آگاہی پھیلانا ضروری ہے تاکہ نوعمر افراد دانشمندانہ آن لائن فیصلے کریں اور سائبر دنیا میں محفوظ رہیں۔ پاکستان کی پریمیر ٹیلی کام اور ڈیجیٹل کمپنیوں میں سے ایک ہوتے ہوئے ہم اسے اپنی ذمہ داری سمجھتے ہیں کہ لوگوں کو انٹرنیٹ کی طاقت اور اس طاقت سے منسلک ذمہ داری سے متعلق تعلیم دیں۔“ اس کامیابی پر تبصرہ کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا ”اس منفرد کامیابی پر ہم انکساری محسوس کرتے ہیں، جو کہ بیکن ہاﺅس سکول سسٹم کے طلبا کی مدد کے بغیر ممکن نہ تھی۔ ہمیں خوشی ہے کہ ہماری مشترکہ کاوشیں پاکستان کے لئے اس اعزاز کا سبب بنی ہیں۔“

پاکستان کو ملنے والے اعزاز پر بیکن ہاﺅس کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر ناصر قصوری نے بھی اظہار تشکر کیا۔ انہوں نے ٹیلی نار اور اس کے ویژن کو بھی سراہا اور اسے اپنے ویژن سے ہم آہنگ قرار دیا، کیونکہ وہ بھی اپنے طلبا کو ڈیجیٹل آگاہی اور تحفظ فراہم کرنے کے خواہشمند ہیں۔ وہ یہ بھی چاہتے ہیں کہ ان کے طلباءاپنے سکولوں میں انٹرنیٹ کے محفوظ استعمال کے متعلق آگاہی حاصل کریں۔ یہی وجہ ہے کہ دونوں کا جوش اور مسرت بھی ہم قدم رہی۔

دوسری جانب ریکارڈ بنانے کی کوشش کے دوران گنیز ورلڈ رریکارڈ کی طرف سے منصفی کے فرائض سرانجام دینے والے سیدہ سباسی جمیسی نے بھی اس کامیابی پر سب کو مبارکباد دی۔

ٹیلی نار اور بیکن ہاﺅس نے ناصرف ایک تبدیلی اور آگاہی کو پھر سے زندہ کیا ہے بلکہ ملک کے لئے پرمسرت اعزاز بھی حاصل کیا ہے۔ ٹیلی نار اوربیکن ہاﺅس دونوں کی ہی کامیابیاں شاندار رہی ہیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -اہم خبریں -