حکمرانوں نے بیرون ملک بھاگنے کیلئے درخواستیں دے دیں ، انقلاب سے پہلے کہیں جانے والانہیں : ڈاکٹر طاہرالقادری

حکمرانوں نے بیرون ملک بھاگنے کیلئے درخواستیں دے دیں ، انقلاب سے پہلے کہیں ...
حکمرانوں نے بیرون ملک بھاگنے کیلئے درخواستیں دے دیں ، انقلاب سے پہلے کہیں جانے والانہیں : ڈاکٹر طاہرالقادری

  

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹرطاہر القادری نے انکشاف کیاہے کہ حکمرانوں نے خاندانی سطح پربیرون ملک جانے کیلئے سامان پیک کرلیاہے اور اپنے گھریلو ملازمین کے ویزاکی درخواست بھی دائر کردی جس کا معمول کے مطابق 18اگست کو انٹرویو ہوناہے لیکن حمزہ شہباز شریف کی طرف سے وزارت خارجہ کی وساطت سے جلدی انٹرویو کیلئے امریکی سفارتخانے کو اپیل کردی گئی ہے ،اس مرتبہ سعودی عرب یا لندن نہیں بلکہ امریکہ جانے کاپروگرام فائنل کرلیاگیاہے لیکن طاہرالقادری انقلاب لائے بغیرکہیں جانے والانہیں ، جتنے مرضی ای سی ایل میں نام ڈال لیں ۔

پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر طاہرالقادری نے بتایاکہ حکمران ریاستی قوت کو اپنے ناپاک عزائم کے لئے استعمال کررہے ہیں، گھروں پر چھاپے مارنا اور کارکنوں کو گرفتار کرنا حکومت کی بوکھلاہٹ کا کھلا ثبوت ہے،بغاوت کا مقدمہ درج کرانا انقلاب کی پہلی فتح ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ حکومت نے ان کا نام ای سی ایل میں شامل کرنے کا منصوبہ بنایا ہے لیکن وہ انہیں بتادیتے ہیں کہ ملک سے ظلم کے اندھیرے ختم ہونے اور انقلاب آنے تک وہ ملک سے باہر نہیں جائیں گے۔

ڈاکٹر طاہر القادری کا کہنا تھا کہ ابھی تو یوم شہدا کا اعلان کیا ہے اور حکمرانوں نے خاندانی سطح پر بھاگنے کا منصوبہ بنالیا ہے لیکن ان کو اس مرتبہ سعودی عرب نے بھی ٹھکانہ دینے سے بھی انکار کردیا ہے، انہیں کینیڈا جانے کا طعنہ دینے والے سن لیں کہ اب کون امریکا فرار ہورہا ہے اور متعلقہ افسران کے دستخطوں پر نشان لگاکر فوٹوکاپیاں صحافیوں کو پیش کردیں ۔

سوالات کا جواب دیتے ہوئے سربراہ پاکستان عوامی تحریک کا کہنا تھا کہ وہ کوئی مارشل لاءنہیں عوام کا اقتدار دیکھ رہے ہیں، اس ملک میں جمہوریت نہیں بادشاہت ہے جسے ختم کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ غریب عوام کے محلے اجاڑ کر اپنے محلات بنانے والوں کو حساب دینا ہوگا،18 کروڑ عوام کے معاشی قاتلوں کو کوئی محفوظ راستہ نہیں دیا جائے گا۔

مزید :

لاہور -اہم خبریں -