رضا ربانی نے آئینی تقرریوں پر وزیر اعظم کا صوابدیدی اختیار ختم کرنے کامطالبہ کر دیا

رضا ربانی نے آئینی تقرریوں پر وزیر اعظم کا صوابدیدی اختیار ختم کرنے کامطالبہ ...
رضا ربانی نے آئینی تقرریوں پر وزیر اعظم کا صوابدیدی اختیار ختم کرنے کامطالبہ کر دیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان پیپلزپارٹی کے سینئر رہنما اور سابق چیئرمین سینیٹ رضا ربانی نے  آئینی تقرریوں پر وزیر اعظم کا صوابدیدی اختیار ختم کرنے کا مطالبہ کردیا۔

سابق چیئرمین سینیٹ رضا ربانی نے کہا کہ آئینی طریقے سے تقرریوں کے حوالے سے صوابدیدی اختیارکو ختم ہونا چاہئے ، صوابدیدی اختیارات کے باعث تقرری سیاست کی نذر ہو جاتی ہے ، یہ اختیار آئینی عہدے اور  ادارے کیلئے بدنامی کا باعث بنتاہے ۔ ایک سیاسی جماعت نے اپنے  ایجنڈے کیلئے آرمی چیف کی تقرری کے وقت ایسا کیا ، آرٹیکل 175  اے  کی شق 3 کے تحت سینئر ترین جج چیف جسٹس تعینات  ہوتا ہے ، آرمڈ فورسز چیف کی تقرری کے حوالے سے آئین کے آرٹیکل 243 میں بھی ترمیم کی جائے اور سینئر ترین افسر کو چیف آف سٹاف مقرر کیا جائے ۔

انہوں نے مزید کہا کہ ترمیم سے کمانڈ کی تبدیلی متنازع نہیں ہوگی بلکہ وزیر اعظم اپنے صوابدیدی اختیار سے دستبردارہو جائیں گے ۔

مزید :

قومی -