غربت میں کمی موسمیاتی تبدیلی، پاکستان نے پائیدار ترقی کیلئے اقوا م متحدہ کے د و اہداف حاصل کر لئے

غربت میں کمی موسمیاتی تبدیلی، پاکستان نے پائیدار ترقی کیلئے اقوا م متحدہ کے ...

  

اسلام آباد(آئی این پی)عالمی سطح پر معاشی، سماجی ترقی کے حصول، تعلیم، صحت کے شعبوں میں بہتری اور تحفظ ماحول کو یقینی بنانے کیلئے اقوام متحدہ کے کی جانب سے سال 2015میں بنائے گئے پندرہ سال کے لیے نافذ ہونیوالے سترہ مختلف اہداف برائے پائیدار ترقی یا سسٹین ایبل ڈوولپمنٹ گولز میں سے پاکستان نے دو اہم اہداف حاصل کرلیئے ہیں، جو غربت میں کمی اور موسمیاتی تبدیلی سے منسلک ہیں۔ مشیر وزیر اعظم ملک امین اسلم نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ اقوام متحدہ کی جانب سے جاری سالانہ جائزہ رپورٹ پائیدار ترقی 2020کے مطابق، عالمی سطح پر پائیدار ترقی کے احداف کے حصول کے حوالے سے 200ممالک کی کارکردگی کا جائزہ لیا گیا اور ان میں سے 93ممالک نے پائیدار ترقی گول نمبر 13کلائمٹ ایکشن کو حاصل کرلیا ہے، جس میں پاکستان بھی شامل ہوگیا ہے، اور اس کلائمیٹ ایکشن گول کو ان ممالک نے سال 2030کی ڈیڈلائن سے دس سال پہلے ہی حاصل کرنے میں کامیاب ہوئے ہیں، جن میں بیشتر ممالک کا تعلق مشرقی اور جنوبی ایشیا سے ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ اقوام متحدہ کی رپورٹ سال برائے 2020ا کے مطابق، پاکستان کے لیے پائیدار ترقی گول نمبر 13کلائمٹ ایکشن کا حصول ملک میں بڑے پیمانے پر جنگلات کے رقبے میں اضافے،کلین گرین پاکستان مں صوبوں، عالمی حدت کا باعث بننے والی ماحول دشمن گئسوں کے اخراج میں ملکی سطح پر کمی کے لیے رینیوایبل انرجی کے منصبوں کا عمل میں لانا اور ٹرانسپورٹ سیکٹر کو ماحول دوست بنانے کے لیے الیکٹرک گاڑیوں کے متعلق پالیسی اور پاکستان کلائمیٹ ایکٹ 2017جیسے اقدامات کے باعث ممنک ہوا ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ جب سے پاکستان نے اقوام متحدہ کے ایداف پائیدارترقی کے حصول کے لیے کیے گئے اقدامات سے پاکستان میں ماحولیاتی ترقی، رینیوایب انرجی اور قومی شجرکاری منصوبوں کے باعث موسمیاتی تبدیلی کے منفی اثرات سے نمٹنے میں کافی مدد مل رہی ہی اور پاکستان ان چند ممالک میں شامل ہے، جہاں پر ایسے اقدامات کیے جارہے ہیں۔

دو اہداف

مزید :

صفحہ اول -