معروف شاعر جون ایلیاکا یومِ پیدائش(14دسمبر)

معروف شاعر جون ایلیاکا یومِ پیدائش(14دسمبر)
معروف شاعر جون ایلیاکا یومِ پیدائش(14دسمبر)

  

:جون ایلیا

جون ایلیا 14 دسمبر  1931ء کو امروہہ، اتر پردیش کے ایک نامور خاندان میں پیدا ہوئے۔وہ برصغیر میں نمایاں حیثیت رکھنے والے پاکستانی شاعر، فلسفی، سوانح نگار اور عالم تھے۔ وہ اپنے انوکھے انداز تحریر کی وجہ سے سراہے جاتے تھے۔ وہ معروف صحافی رئیس امروہوی اور فلسفی سید محمد تقی کے بھائی تھے۔ جون ایلیا کو عربی، انگریزی، فارسی، سنسکرت اور عبرانی میں اعلیٰ مہارت حاصل تھی۔

جون ایک ادبی رسالے انشاء سے بطور مدیر وابستہ رہے جہاں ان کی ملاقات اردو کی  مصنفہ زاہدہ حنا سے ہوئی جن سے بعد میں انہوں نے شادی کر لی۔

جون ایلیا طویل علالت کے بعد 8 نومبر 2002ء کو کراچی میں انتقال کر گئے۔

نمونۂ کلام

بے قراری سی بے قراری ہے 

وصل ہے اور فراق طاری ہے 

جو گزاری نہ جا سکی ہم سے 

ہم نے وہ زندگی گزاری ہے 

 بن تمہارے کبھی نہیں آئی 

کیا مری نیند بھی تمہاری ہے 

 اس سے کہیو کہ دل کی گلیوں میں 

رات دن تیری انتظاری ہے 

 اک مہک سمتِ دل سے آئی تھی 

میں یہ سمجھا تری سواری ہے 

حادثوں کا حساب ہے اپنا 

ورنہ ہر آن سب کی باری ہے 

 شاعر: جون ایلیا

Beqaraari   Si   Beqaraari   Hay

Wasl   Hay   Aor   Firaaq   Taari   Hay

 Jo   Guzaari   Na   Ja   Saki   Ham   Say

Ham   Nay   Wo   Zindagi   Guzaari   Hay

 Bin   Tumhaaray   Kabhi   Nahen   Aai

Kaya   Miri   Neend   Bhi   Tumhaari   Hay

 Uss   Say   Kahio   Keh   Dil   Ki   Galion   Men

Raat   Din   Teri   Intazaari   Hay

 Ik   Mahak   Samt-e-Dil   Say   Aai   Thi

Main   Yeh   Samjha   Tiri   Sawaari   Hay

 Haadson   Ka   Hisaab   Hay   Apna

Warna   Har   Aan   Sab   Ki   Baari   Hay

Poet: Jaun   Eliya 

 

 

مزید :

شاعری -رومانوی شاعری -غمگین شاعری -